imageshad.jpg

This Page has 23857viewers.

Today Date is: 18-01-19Today is Friday

جرمنی کے دارلحکومت برلن میں موجود پاکستانی سفارت خانے کے عملے سے پاک جرمن پریس کلب کے ممبران کی ملاقات

  • جمعہ

  • 2019-01-11

برلن جرمنی ( رپورٹ مہوش خان بیوروچیف) حالیہ دنوں میں برلن میں مقیم پاکستانی صحافیوں نے ایک پریس کلب کی بنیاد رکھی جس کا نام پاک برلن پریس کلب رکھا گیا۔پریس کلب کے ممبران نے وہاں موجود پاکستانی سفارت خانے کے عملے سے ملاقات کی جن میں پاکستانی سفیر جوہر سلیم ،کے علاوہ،سیکنڈ سیکرٹری وقاص علی اور تھرڈ سیکریٹری علی رضا بھی شامل تھے۔ ملاقات کا مقصد پریس کلب کے ممبران اور ایمبسی آف پاکستان کے اعلی عہدیداروں کو آپس میں ملانا تھا تاکہ مستقبل میں پاکستانی کمیونٹی کو درپیش مسائل کے حل کے لئے مل کرکوششیں کی جا سکیں۔ ملاقات میں صحافیوں نے پاکستان کے حوالے سے کئ سوالات کئے جن میں سی پیک سے لیکر وہاں انویسمینٹ، اور حالات حاضرہ کا جائزہ لیا گیا ۔اس کے علاوہ بھی کئ اہم امور پر تبادلہ خیال کیا گیا جن میں سب سے اہم مستقل میں جرمنی میں پاکستانیوں کے لئے نوکریوں کا آسان حصول تھا۔ محترم سفیر جوہر سلیم صاحب کا کہنا تھا کہ اس وقت جرمنی میں صرف آئ ٹی فیلڈ میں اٹھاسی ہزار آسامیاں خالی ہیں،لیکن اس کے لئے ہمارے لوگوں کو سب سے پہلے ان کی زبان آنے ملکوں میں سیکھنی پڑے گی تاکہ یہاں نوکری کا حصول ان کے لئے آسان ہو۔ اسی طرح انھوں نے اس اہم نقطے کی طرف بھی توجہ دلائی کہ جرمنی یا کسی بھی باہر مملک میں معاش کے لئے صرف لیگل طریقے اختیار کئے جائیں ،اور ڈائیریکٹ ویزے اپلائ کئے جائیں،کیونکہ ایجنٹ صرف اور صرف ایک دھوکہ ہیں،جو صرف پیسے کمانے کی خاطر انسانی جانوں کو خطرے میں ڈالتے ہیں۔اور اگر کوئ یہاں تک پہنچنے میں کامیاب ہو بھی جائے تب بھی اس کے لئے یہاں پیسے کمانے کا کوئ ذریعہ نہیں،اور نتیجتا ان کو واپس جانا ہی پڑتا ہے۔ صحافیوں نے یہاں پاکستانی کمیونٹی کو درپیش مختلف مسائل کے متعلق بھی بات کی ۔جن میں پاکستان سے اعلی تعلیم حاصل کرنے کے لئے آنے ولے طلبہ کے مسائل، غیر قانونی طور پر جرمنی آنے والے افراد اور سیاسی پناہ حاصل کرنے خواہش مند افراد سے متعلق مسائل پر بات چیت کی گئ۔ پاک جرمن پریس کلب کے حوالے سے پاکستانی محترم سفیرجناب جوہر سلیم نے انتہائی خوشی کا اظہار کیا ۔ان کا کہنا تھا کہ جرمنی کے دیگر شہروں کی طرح برلن میں یوں پریس کلب کا بننا واقعی ایک خوش آئنداقدام ہے۔ پریس کلب کے ممبران نے بھی اس موقع پر خوشی کا اظہار کیا ۔ان کا کہنا تھا کہ یوں اب ہم مل کر مختلف امور و مسائل کے حل کے لئے بہتر حکمت عملی تیار کر سکیں گے۔

صحت و تندرستی کے لیے خاص مشورے