imageshad.jpg

This Page has 13788viewers.

Today Date is: 17-12-18Today is Monday

مشہور پاپ سنگر ناصر بیراج مہندی کے ساتھ ایک شام چیف ایڈیٹر رانا سعید اور نبیلہ اکبر کے ساتھ

  • پیر

  • 2017-04-03

ٓآج ہم ایک مشہور ابھرتے ہوئے گلوکار جن کو پاپ اور بھنگڑا گائیکی میں کما ل حاصل ہے اسکا انٹرویو کرنے جا رہے ہیں جنکا نام ناصر بیراج مہندی ہے۔ ناصر صاحب ہمارے ملک کی ایک خوبصورت آواز ہے میں اور میری کولیگ نبیلہ اکبر ان کے گھر واقع غالب مارکیٹ گلبرگ پہنچے حسب روایت انھوں نے ہماری کافی آو بھگت کی ہم اب انٹرویو کی طرف چلتے ہیں۔ رانا سعید: ناصر بیراج مہندی صاحب آپنے اپنی گائیکی کا آغاز کب اور کس سے متاثر ہو کر کیا۔ ناصر بیراج مہندی صاحب: رانا صاحب میں نے اپنی گلوکاری کا آغاز دلیر مہندی صاحب سے متاثر ہو کر کیا ہے۔ رانا سعید: آپکا گیٹ اپ اور اسٹائل بلکل دلیر مہندی جیسا ہے اس کی کوئی خاص وجہ ہے۔ ناصر بیراج مہندی : رانا صاحب میں نے باقاعدہ طور پر دلیر مہندی صاحب کی شاگردی اختیار کی ہے۔جسکی باقاعدہ ایک رسم طارق طافو صاحب کے گھر پر ہوئی جسمیں دلیر مہندی تو تشریف نہیں لا سکے انھوں نے اپنے بھائی شمشیر سنگھ کو بھیجا۔ اس تقریب میں بڑے طافو صاحب بھی موجود تھے میں ثبوت کے طور پر تصاویر پیش کرتا ہوں۔ رانا سعید: آ پ نے کن کن مشہور گلوکاروں کے ساتھ پر فارم کیا ہے۔ ناصر بیراج مہندی: میں نے تمام چینل پر گایا ہے۔کوک اسٹوڈیو میں بھی مجھے گانے کا موقع ملا ہے اور لوگوں نے کافی پسند کیا ہے۔میں پنجابی۔ سرائیکی۔ اردو اور پشتو زبان میں بھی گاتا ہوں۔ نبیلہ اکبر: آ پنے اپنے نام کے ساتھ بیراج لکھا ہے اس کا کیا مطلب ہے۔ ناصر بیراج مہندی : اس کا مطلب ابھرتا ہوا۔ پھوٹتا ہوا۔ نبیلہ اکبر: فن کی دنیا میں آ مد کو کتنا عرصہ ہوا ہے۔ ناصر بیراج مہندی : مجھے گلوکاری کرتے ہوئے 6 سال ہو چکے ہیں۔ میر ا بیٹا کامران ناصر گایا کرتا تھا اب ہم دونوں مل کر گاتے ہیں۔ رانا سعید: ناصر صاحب آ پنے اب تک کون کون سے ممالک میں اپنے فن کا مظاہرہ کیا ہے۔ ناصر بیراج مہندی : ابھی تک کئی بار دبئی (متحدہ امارات) میں گا چکا ہوں اور آئندہ کینڈا اور انڈیا کا پروگرام ہے۔ رانا سعید: آ پنے کن کن مشہور گلوکاروں کے ساتھ پرفارم کیا ہے۔ ناصر بیراج مہندی : میں ویسے تو سبھی کے ساتھ گا چکا ہوں لیکن قابل ذکر ابرارالحق۔ سکھبیر سنگھ۔ عارف لوہار۔ عطا اللہ عیسی خیلوی۔ ہنس راج ہنس۔ بلال سعید۔ علی ظفر وغیرہ رانا سعید: آپنے کبھی سکولوں کالجوں میں بھی شو کیے ہیں۔ ناصر بیراج مہندی : میں نے بہت سارے شو کے ہیں۔ سرگودھا یونیورسٹی۔سپیریر یونیورسٹی۔ لاہور کالج فار وومن۔ نبیلہ اکبر: آپ اپنی سالگرہ کیسے مناتے ہیں۔ ناصر بیراج مہندی : نبیلہ جی میں اپنی سالگرہ کا کیک منٹل ہسپتال میں جا کر مناتا ہوں۔ ڈاکڑوں کے لئے الگ کیک اور زہنی معذور افراد کے لیے الگ کیک لے کے جاتا ہوں۔اور انھیں کھانا بھی کھلاتا ہوں۔ میں ان لوگوں کی دعاؤں کی بدولت اس مقام پر پہنچا ہوں۔ نبیلہ اکبر: اس وقت آپکی عمر کتنی ہے اور کتنے بچے ہیں۔ ناصر بیراج مہندی : اس وقت میری عمر 55 سال ہے اور میر ی دو بیٹے ہیں اور دو ہی بیٹیاں ہیں۔ نبیلہ اکبر: آپکی تعلیم کتنی ہے۔اور شادی کب ہوئی۔ ناصر بیراج مہندی : میری تعلیم میٹرک میں نے گلبرگ ہائی سکول سے حاصل کی ہے اور میں شادی میٹرک کرنے کے بعد ہی ہو گئی ہے۔ نبیلہ اکبر: آپ تو فوک اور پاپ میوزک گاتے ہیں پھر بھنگڑا کو کیسے شامل کیا اپنے گانوں میں۔ ناصر بیراج مہندی : بھنگڑا دراصل پریشانیوں کا حل ہے۔جب میں بھنگڑا ڈالتا ہوں تو لوگ اپنا غم بھول جاتے ہیں اور خوشی سے ناچنے لگتے ہیں جسسے مجھے دلی سکون ملتا ہے۔ نبیلہ اکبر: کیا آپکا کسی سیاسی پارٹی سے بھی تعلق ہے۔ ناصر بیراج مہندی : جی نبیلہ جی میرا مسلم لیگ ن سے تعلق ہے اور میرا لیڈر میا ں محمد نواز شریف صاحب ہیں۔میں نے پارٹی کے لیے ترانے بھی گائے ہیں۔ رانا سعید: گانوں کی شاعری خود کرتے ہیں یا کسی سے لکھواتے ہیں۔ ناصر بیراج مہندی : میں خود بھی شاعری کرتا ہوں اور زیادہ تر شاعر اکرم خیال (فلمی) کے گانے گاتا ہوں۔ رانا سعید: اپنی زندگی کا کوئی ناقابل فراموش واقع بتائیں۔ ناصر بیراج مہندی : لوگ اپنا فن اپنی اولاد میں منتقل کرتے ہیں۔ لیکن میرے ساتھ الٹ ہوا ہے میر ا یہ فن میرے بیٹے سے منتقل ہوا ہے۔ نبیلہ اکبر: آپ نئے آنے والے گلوکاروں کے متعلق کے رائے رکھتے ہیں۔ ناصر بیراج مہندی : نئے آنے والو ں کو میں ہمیشہ ویل کم کرتا ہوں ان کی حوصلہ افزائی کرتا ہوں۔ رانا سعید: کیا آپ نے کوئی ملی ترانہ گایا ہے۔ ناصر بیراج مہندی : میں نے پاک فوج کے لیے ملی ترانہ گایا ہے۔جسکے بول ہیں۔ دنیا وچ کسے وی شاہین دا جوڑ نیئں۔۔۔۔ ساڈی پاک فوج دا کوئی توڑ نیئں فوج دا مان ودایا کرو۔۔ سن65 وانگوں جوش وچ آیا کرو مجھے جنرل شفیق نے چونڈہ کے مقام پر ایک پروگرام میں گولڈ میڈل دیا تھا۔جو میرے لیے بہت بڑا اعزاز ہے۔ جنرل صاحب بھی جوش میں آ کر میرے ساتھ بھنگڑابھی ڈالتے رہے۔ نبیلہ اکبر: پاک بھارت تعلقات کافی خراب ہیں آپ اس بارے میں کچھ کرنا چاہتے ہیں۔ ناصر بیراج مہندی : میں امن اور بھائی چارے کا پیغام پوری دینامیں پھیلانا چاہتا ہوں۔انڈیا والوں نے میکا سنگھ نے ہماری دھمال ہو لا میری پت رکھیوں بھلا جھولے لال گا کر پاکستان کو ٹربیوٹ پیش کیا ہے تاکہ نفرتیں کم ہوجائیں۔ میں بے بھی اس کا جواب بابا گرو نانک صاحب کا کلام کی ویڈیو سانگ بنا کر اوھر بھیجا ہے۔جسکو دلیر مہندی صاحب میکا سنگھ اور شمشیر سنگھ صاحب نے بہیت پسند کیا ہے۔ رانا سعید: ناصر صاحب آپ نے کوئی اپنے گانوں کی سی ڈی بھی ریلیز کی ہے۔ ناصر بیراج مہندی : میوزک وولڈ والوں نے ریلیز کی ہے۔ رانا سعید: ناصر بیراج صاحب آپ کا بے حد شکریہ اپنا قیمتی وقت دینے کا۔ ناصر بیراج مہندی : رانا صاحب اور نبیلہ صاحبہ میں آپ لوگوں کا بھی مشکور ہوں کہ آپ نے مجھے اس قابل سمجھا۔

صحت و تندرستی کے لیے خاص مشورے