imageshad.jpg

This Page has 52929viewers.

Today Date is: 23-04-19Today is Tuesday

برف کا آتش فشاں۔ایم زیڈ کنول کا شعری مجموعہ۔

  • جمعہ

  • 2019-03-15

برف کا آتش فشاں۔ایم زیڈ کنول کا شعری مجموعہ۔ اردو و پنجابی کی معروف شاعرہ، ادیبہ، چیف ایگزیگٹو جگنو انٹرنیشنل ایم زیڈ کنول کا شعری مجموعہ برف کا آتش فشاں باقر پبلی کیشنز کے زیر اہتمام شائع ہو چکا ہے۔ ایم زیڈ کنول نے اپنی زندگی شعر و ادب کے لیے وقف کر رکھی ہے۔ عالمی سطح پر انہوں نے بہت سے اعزازات حاصل کیے ہیں۔ ان کی شاعری جذبات و احساسات کی شاعری ہے جو کہ انسان کو زمین سے بے نیاز نہیں کرتی بلکہ اس کی سوچ کو وسیع کرتی ہے اور اسے دریافت کے نئے جہانوں میں لے کر جاتی ہے جہاں کہ اس کے لیے سرشاری ہے۔ وہ سوچ کو بھی نئے جہان معنی سونپتی ہے۔ میں تھی خود کو ڈوھنڈنے نکلی۔۔۔ آگئی کائنات مٹھی میں۔ دھڑکنوں کی خامشی سے پوچھ لو۔۔۔کیا تخیل سے گماں کہنے لگا۔ اپنے ایماں کو خیرات میں بانٹ کر۔۔۔کفر کا ساتھ کاسہ ہے رکھا ہوا۔ اایم زیڈ کنول کی شاعری کے بارے میں معروف مصنفہ بانو قدسیہ کاکہنا تھا کہ ”کنول کی شاعری کے کئی رنگ ہیں۔ اس کی نظموں میں نسیم سحر اور پو پھٹنے کا رنگ ہے۔ اس کی غزلیں ڈھلتی شام کے وہ خوش رنگ سائے ہیں جو مختلف اوزان میں جگہ جگہ دکھائی دیتے ہیں مگر نظر نہیں آتے۔ مجھے کنول کی شاعری میں خاص طور پر ان مترنم صداؤں کا احساس ہوا ہے جو الفاظ کی ادائی کے بجائے الفاظ کی موجودگی اوران کی شخصیت کے آہنگ سے پیدا ہوتی ہیں۔ اس کی شاعری کے تیور بڑے کڑے ہیں۔ اس نے کھلی آنکھوں سے اندر اور باہر کے مشاہدے کی ڈوری ایک ساتھ تھام رکھی اور اپنے احساس کے دانے پروتی گئی تو اس کے تازہ کلام کا ہر جگہ انتظار ہوا کرے گا۔“ ایم زیڈ کنول کی شاعری کے بارے میں مرحومہ بانو قدسیہ کو کہنا آج حرف بحرف سچ ثابت ہورہا ہے۔ ان کی کتب کا شدت سے انتظار کیا جاتا ہے۔ جیسا کہ اب ان کی نئی کتابوں کی آمد پر ادبی حلقے میں مسرت کا اظہارکیا جارہا ہے۔ ان کی گزشتہ کتابوں ”کائنات مٹھی میں“ اور چہرے گلاب سے“ کی طرح اس کتاب کو بھی خوب پذیرائی حاصل ہو رہی ہے جو کہ شاعرہ کی مقبولیت کا ثبوت ہے۔ یہ کتاب دبستان ادب میں تازہ ہوا کا جھونکا ہیں۔۔

صحت و تندرستی کے لیے خاص مشورے